نسبت مع اللہ کی شان و شوکت

تعارف کتاب:

اہم نوٹ : سلسلہ مواعظ حسنہ کی کتب میں موجود عربی عبارتوں کو درست طور پر دیکھنے کے لیے نور حرا فونٹ نیچے دیے گئے لنک سے ڈاؤن لوڈ کر کے اپنے کمپیوٹر میں انسٹال کریں اور پھر مکتبہ جبریل کی سیٹنگ میں نور حرا فونٹ کو منتخب کر لیں ۔
http://bit.ly/2ckieYi
اس وعظ كا تعارف
دنیا اور دنیا میں جو کچھ نعمتیں ہیں وہ سب اللہ تعالیٰ کی ادنیٰ بھیک ہے جسے حدیث پاک میں مچھر کے پر سے بھی زیادہ حقیر قرار دیا گیا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے انسان کو نعمتوں پر نہیں بلکہ نعمت دینے والے پر زندگی فدا کرنے کے لیے پیدا فرمایا ہے۔ اگر انبیاء کرام مبعوث ہوکر اللہ کے احکام انسانوں تک نہ پہنچاتے تو انسان کبھی نہ جان پاتا کہ اللہ پر کیسے فدا ہوا جائے۔ نبی آخر الزمان صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد ان کے نائبین علماء ربّانین اور اولیائے کرام دین کے احکامات لوگوں تک پہنچانے کا ذریعہ ہیں۔ دین کے احکامات پر عمل کرنا اور گناہوں سے بچنا ہی دراصل اللہ پر مرمٹنا ہے۔
شیخ العرب والعجم عارف باللہ مجددِ زمانہ حضرت اقدس مولانا شاہ حکیم محمد اختر صاحب رحمۃ اللہ علیہ نے اپنے وعظ ’’نسبت مع اللہ کی شان و شوکت‘‘ میں قرآن و حدیث کی روشنی میں احکامات شریعہ پر عمل کرنے کے ایک عظیم الشان ثمرہ کا ذکر فرمایا ہے جس کو تصوف کی اصطلاح میں اللہ تعالیٰ کی نسبت کا حصول کہتے ہیں۔ حضرت اقدس نے اس وعظ میں نسبت مع اللہ کی وہ بے مثل لذت بھی بیان فرمائی ہے جس کو وہ ہی سمجھا سکتا ہے جو خود صاحب نسبت ہو۔
مزید ۔۔۔

10 نمایاں اراکین

مزید ۔۔۔

اکتوبر کے نمایاں اراکین

    ٹائپنگ اعداد وشمار

    • آج ٹائپ کردہ صفحات :0
    • آج تصحیح شدہ صفحات :0
    • اس ہفتہ ٹائپ کردہ :0
    • اس ہفتہ تصحیح شدہ :0
    • اس ماہ ٹائپ کردہ:0
    • اس ماہ تصحیح شدہ:0
    • کل ٹائپ کردہ صفحات :18262
    کتابوں کے جملہ حقوق بحق ناشرین ومصنفین محفوظ ہیں۔ ہمارا مقصد صرف سہولت تحقیق وتلاش ہے، لہذا مکتبہ کا مالی فائدہ کے لئے استعمال ممنوع ہے،
    آپ مستند دینی کتابیں ہمیں ارسال فرماکر مکتبہ کے کام میں تعاون کرسکتے ہیں۔ جزاکم اللہ خیرا

    علم دین | 2006 - 2016