عرضِ ناشر
بِسْمِ اللّٰہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم
امابعد!چونکہ ظاہر اور باطن کی اصلاح کے ذریعہ حق تعالیٰ سے تعلق بڑھانا ہر مسلمان پر لازم ہے جو کے تصوف کی روح ہے۔اس عظیم الشان مقصد کے حصول کے لیے ہمارے اکابرین نے اخلاق اور تہذیب نفس کے علاج کے لیے مختلف و متعدد کتابیں لکھیں ان میں سے ایک تبلیغ دین ہے۔
''تبلیغ دین'' جس کا اصل نام ''الاربعین فی اصول الدین'' ہے۔ حجة الاسلام حضرت امام غزالیl کا عظیم شاہکار ہے جو جمیع مسلمین اور بہ مصداق ''مشک آنست کہ خود ببویدنہ کہ عطا ربگوید کسی تعارف کا محتاج نہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حکیم الامت حضرت مولانا اشرف علی تھانویl نے نہ صرف یہ کہ اسے خانقاہ اشرفیہ تھانہ بھون میں سالکین کے نصاب میں شامل کیا بلکہ اس کی افادیت کے پیش نظر مولانا عاشق الٰہی میرٹھیl سے کہہ کر اس کا اردو ترجمہ بھی کرایا تاکہ اردو قارئین کیلئے بھی اس سے استفادہ ممکن ہو، اس اردو ترجمہ کی مزید افادیت و تسہیل کی غرض سے حضرت مفتی جمیل احمد تھانویl نے اس پر حواشی کااضافہ فرمایا اور پھر ہر بیان (اصل) کے آخر میں حضرت مولانا مفتی محمد حسن صاحب دامت برکاتہم العالیہ نے فوائد کا اضافہ فرمایا تا کہ مضامین کا خلاصہ ذہن نشین ہو جائے اور عمل میں آسانی ہو اور عام قاری بھی اس سے بہ خوبی مستفیض ہوسکے۔
اللہ تعالیٰ نے ہمیں توفیق بخشی کہ ہم اس عظیم دینی خدمت کو حسن ظاہری سے آراستہ کر کے خوبصورت و دلکش انداز میں مضبوط جلد بندی اور عمدہ طباعت و جاذب نظر ٹائیٹل کے ساتھ آپ کی خدمت میں پیش کریں تاکہ قاری اس کے حسنِ باطن کے ساتھ ساتھ حسن ظاہر و حسن صورت سے بھی محظوظ ہوسکے۔اللہ تبارک و تعالیٰ اس خدمت کو شرفِ قبولیت عطا فرمائیں اور اس سلسلہ میں کوشش کرنے والے تمام حضرات کیلئے ذخیرۂ آخرت بنائیں۔ آمین۔