حدیث: ۳:…
’’عن سعد بن ابی وقاص رضی اللہ عنہ قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم لعلیؓ انت منی بمنزلۃ ھرون من موسی الا انہ لا نبی بعدی۔‘‘ (بخاری ص ۶۳۳ ج ۲)
’’و فی روایۃ المسلم أنہ لا نبوۃ بعدی ۔‘‘
(صحیح مسلم ص ۲۷۸ ج ۲)
ترجمہ: ’’سعد بن ابی وقاص رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت علی رضی اللہ عنہ سے فرمایا: تم مجھ سے وہی نسبت رکھتے ہو جو ہارون کو موسیٰ (علیہما السلام) سے تھی، مگر میرے بعد کوئی نبی نہیں۔ ‘‘ اور مسلم کی ایک روایت میں ہے کہ: ’’میرے بعد نبوت نہیں۔‘‘
حضرت شا ہ ولی اللہ محدّث دہلویؒ اپنی تصنیف ’’ازالۃ الخفأ میں ’’ مآثر علیؓ ‘‘ کے تحت لکھتے ہیں:
’’فمن المتواتر: أنت منی بمنزلۃ ھارون من موسیٰ۔‘‘ (ازالۃ الخفأ مترجم ص ۴۴۴ ج ۴)
ترجمہ: ’’متواتر احادیث میں سے ایک حدیث یہ ہے کہ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت علی رضی اللہ عنہ سے فرمایا: تم مجھ سے وہی نسبت رکھتے ہو جو ہارون کو موسیٰ (علیہما السلام) سے تھی۔‘‘
حدیث: ۴:…
’’عن ابی ھریرۃؓ یحدث عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم قال کانت بنو اسرائیل تسوسھم الانبیاء کلما ھلک نبی خلفہ نبی وانہ لا نبی بعدی وسیکون خلفاء فیکثرون۔‘‘
(صحیح بخاری ص ۴۹۱ ج ۱، واللفظ لہ، صحیح مسلم ص ۱۲۶ ج۲، مسند احمد ص ۲۹۷ ج ۲)
ترجمہ: ’’حضرت ابوہریرہؓ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم سے بیان کرتے ہیں کہ حضور علیہ السلام نے فرمایا کہ بنی اسرائیل کی قیادت خود ان کے انبیأ کیا کرتے تھے، جب کسی نبی کی وفات ہوتی تھی تو اس کی جگہ دوسرا نبی آتا تھا لیکن میرے بعد کوئی نبی نہیں، البتہ خلفأ ہوں گے اور بہت ہوں گے۔ ‘‘
بنی اسرائیل میں غیر تشریعی انبیأ آتے تھے جو موسیٰ علیہ السلام کی شریعت کی تجدید کرتے تھے، مگر آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد ایسے انبیأ کی آمد بھی بند ہے۔
حدیث: ۵:…
’’عن ثوبان رضی اللہ عنہ قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم انہ سیکون فی أمتی کذابون ثلاثون کلھم یزعم انہ نبی وأ نا خاتم النبیین لا نبی بعدی۔‘‘