اس سے مرض بڑھتا ہے ۔کیا یہ درست ہے ؟
المستفتی :نامعلوم متعلم دارالعلوم حقا نیہ… ۷؍جنوری ۱۹۸۴ء
الجواب : یہ توہم پرستی ہے۔ جو کہ حرام ہے ۔ اس سے احتراز کرنا لازمی ہے۔وھوالموفق
عوامی توسل اور موتیٰ کو فریاد رس قرار دینا
سوال :کیا فرماتے ہیں علماء دین ان مسائل کے بارے میں کہ (۱) اگر کوئی شخص عقیدۃًکسی بیمارکو کسی خاص مزار کیلئے لے جاتے ہیں ۔اور توسل کرتے ہیں ۔تو کیا یہ صحیح ہے ؟(۲)اگر کسی کا بیٹا نہ ہو تو کیاکسی خاص مزار کیلئے جا نا اور اولاد مانگنا جائز ہے ؟(۳) کوئی ولی یا نیک شخص وفات کے بعد کسی کے حال سے باخبر ہو کر فریاد سنتاہے یا نہیں؟
المستفتی :نا معلوم متعلم دارالعلوم حقانیہ…۱۹۸۵ء؍۴؍۱
الجواب : (۱) (۲)توسل با لصالحین جائز ہے۔ لیکن عوام توسل شرعی اور توسل شر کی میں فرق نہیں کر سکتے۔ لہٰذا عوام کیلئے یہ اقدام ممنوع ہے۔(۳)سماع الموتیٰ حق ہے ۔لیکن موتی کو فریاد رس قرار دینا نا حق ہے ۔وھوالموفق
مملوک قرآن مجید سے حیلہ اسقاط کرنا
سوال : کیا فرماتے ہیں علما ء دین کہ میت کے جنازہ کے بعد جو حیلہ اسقاط کیا جاتا ہے ۔اس میں قرآن مجید کو دائرہ میں پھیرنا جائزہے یانہیں ؟
المستفتی : تاج محمد ہری پور
الجواب : اگر یہ مصحف مملوک ہو موقوف نہ ہو ۔تو اس کا تملیک اور تملّک جائز ہے ۔لہٰذااس سے حیلہ اسقاط کرنا فی نفسہ جائز ہے ۔ لکونہ مالاً۔وھوالموفق
کسی چور کے خلاف ختم قرآن اوربد دعا کرنا
سوال : ہمارے ہاں کسی سے چوری ہوگئی ۔ تو اس شخص نے لوگوں سے ختم قرآن کرایا ۔ اور پھر چور کے حق میں سب لوگوں نے الٹے ہاتھوں بددعاکی۔ تو کیا شریعت میں ایسا ختم قرآن کرنا اور پھر بددعا کا کوئی جواز ہے یا نہیں۔اور اگر جائز ہے ۔توپھر قرآن پاک ھدایت کیلئے آیا ہے ۔نہ کہ کسی کے خانہ خرابی کیلئے۔تو وضاحت فرماکر تشفی فرمائیے؟
المستفتی: مشتاق احمد پرائمری سکول حاجی زئی… ۱۹۷۲ء
الجواب : واضح رہے ۔کہ جس شخص سے چوری ہوئی ہے ۔تو وہ مظلوم ہے ۔اور مظلوم کیلئے بد دعا کرنا ظالم کے حق میں جائز ہے۔قال اللہ تعا لی لایحب اللہ الجھر با السوء الاًمن ظلم{۱}وقال رسول اللہ ﷺایاک و دعوۃ المظلوم ۔{۲}اور چو نکہ عبادت کے بعد دعا مستجاب ہے لھذا ختم قرآن کے بعد بد دعا کرناجائز ہوگا ۔کیونکہ قرآن کو اعانت للمظلوم کیلئے وسیلہ بنانا ہدایت سے تضاد نہیں رکھتاہے۔وھوالموفق
مسئلہ توسل بالصالحین کی تفصیل
سوال :توسل با لصالحین کا کیا حکم ہے ؟