بسم اللہ الرحمن الرحیم
فتاویٰ دیوبند پاکستان المعروف بفتاویٰ فریدیہ (جلد دوم)
الحمد للہ وکفی وسلام علی عبادہ الذین اصطفی اما بعد! اللہ تعالیٰ کا لاکھ لاکھ شکر ہے کہ اپنی بے پایاں اور بے انتہا رحمت وکرم سے جلد دوم کی تکمیل کی توفیق بخشی، دسمبر ۲۰۰۳ء کو مکمل ہو کر کتابت کی مراحل شروع ہوئے، اس جلد کی ترتیب وتبویب اور تخریج میں بھی ان تمام امور کا خصوصیت سے خیال رکھا گیا ہے جن کی تفصیل پہلی جلد میں آچکی ہے، بعض مسائل میں عنوان کے لحاظ سے بظاہر تکرار نظر آتا ہے لیکن معنون میں فرق بین، بعض مسائل کی اہمیت، سوالات کی مختلف نوعیت اور حضرت سیدی وسندی ومولائی حضرت مفتی صاحب دامت برکاتہم کی بعض علمی تدقیقات کے اضافوں کی وجہ سے حذف نہیں کئے گئے ہیں، پہلے ارادہ تھا کہ پوری ’’کتاب الصلوٰۃ‘‘ ایک جلد میں آجائے مگر بڑھتی ہوئی ضخامت کی وجہ سے کتاب الصلوٰۃ کے بقیہ ابواب تیسری جلد میں ان شاء اللہ شامل ہوںگے۔
اللہ تعالیٰ کی سب سے بڑی نعمت یہ ہے کہ حضرت مفتی صاحب دامت برکاتہم نے ہر باب اور فصل کو لفظ بہ لفظ مطالعہ فرماکر تصحیح کی ہے اور کوئی لفظ بھی حضرت صاحب کے مسلک ومزاج کے خلاف اس میں شامل نہیں ہے، اور بندہ نے اپنی رائے سے تمام فتاویٰ میں کہیں بھی حُک واضافہ نہیں کیا ہے، بندہ پر اللہ تعالیٰ کی یہ مہربانی ہے کہ حضرت شیخی وسندی ومولائی حضرت مفتی صاحب دامت برکاتہم کی سرپرستی، حضرت سیدی واستاذی مولانا مفتی سیف اللہ حقانی مدظلہ العالی کی نگرانی اور مولانا حافظ حسین احمد صدیقی مدظلہ کی سعی واہتمام میّسر رہی۔
آخر میں عرض ہے کہ بشری بھول چوک سے کوئی محفوظ نہیں کہیں بھی لغزش اور کوتاہی یقینی ہے اگر چہ بندہ سے جتنی محنت وکاوش ہو سکتی تھی اس میں کوئی کوتاہی نہیں ہونی دی ہے، تخریجی امور میں مولانا عصمت اللہ حقانی کی معاؤنت ، اردو گرائمر اور محاورہ کی تصحیح اور پروف میں جناب سلطان فریدی صاحب کی مساعی اور کمپوزنگ میں حافظ ولی الرحمن صدیقی کی انتھک محنت وجدوجہد کا انتہائی مشکور ہوں ، اللہ کریم ان کی مساعی کو شرف قبولیت بخشے،اور حضرت مفتی صاحب دامت برکاتم کا سایہ ہم پر برقرار رکھے اور ان کا علم سلف سے خلف تک منتقل فرمائے اور فقیر کی یہ خدمت علماء کی نگاہ میں وقیع وپسندیدہ اور عوام کیلئے زیادہ سے زیادہ لائق استفادہ بنائے، اور ہمارے اساتذہ ومشائخ اور والدین کیلئے دنیا وآخرت میں فلاح ونجات کا ذریعہ ثابت ہو۔
ربنا تقبل منا انک انت السمیع العلیم
طالب دعا:… محمد وہاب منگلوری عفی عنہ
دارالافتاء دارالعلوم صدیقیہ زروبی ضلع صوابی
کتاب الطہارۃ
الباب الاول فی الوضوء
ریل کے بیت الخلاء میں وضو کرنا درست ہے