کتاب الطہارۃ


{اِنَّ اللّٰہَ یُحِبُّ التَّوَّابِیْنَ وَیُحِبُّ الْمُتَطَھِّرِیْنَ}
ترجمہ:اللہ توبہ کرنے والوں سے محبت کرتا ہے اور پاک و صاف رہنے والے اپنے بندوں کو محبوب رکھتا ہے۔(سورۂ بقرہ )
{فِیْہِ رِجَالٌ یُّحِبُّوْنَ اَنْ یَّتَطَھَّرُوْا وَاللّٰہُ یُحِبُّ الْمُطَّھِّرِیْنَ}
ترجمہ: اس میں ہمارے ایسے بندے ہیں جو بڑے پاکیزگی پسند ہیں اور اللہ تعالی خوب پاک و صاف رہنے والے بندوں سے محبت کرتا ہے۔(سورۂ توبہ)
حدیث
قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم : (( اَلطّھُوْرُ شَطْرُ الاِیْمَانِ))
ترجمہ: طہارت و پاکیزگی جزو ایمان ہے۔ ( مسلم ۔معارف الحدیث ۲۱ج۳)






کنویں میں بلی گر کر مر گئی تو کنواں کیسے پاک ہوگا
(۱۱۰)س:… کنویں کے اندر بلی گر کر مر گئی دو دن کے بعد بدبو ظاہر ہوئی ،تیسرے دن سڑی ہوئی بلی کو نکالا،اب اس کنویں میں سرکاری قانون سے دوائی ڈالی گئی کنویں کے پانی کو شرعی طور پر نہیں نکالا گیا، غیر مذہب لوگ اس پانی کو استعمال کرتے ہیں،فی الحال ہمارے امام صاحب نے جان بوجھ کر اس پانی سے غسل کیا ،پھر جمعہ کی نماز پڑھائی امام اور مقتدی صاحبان کی نماز درست ہوئی یا نہیں؟
ج:…حامدا ومصلیا، الجواب وباللہ التوفیق:جب کہ کنویں میں پانی کم ہو اور جو آسانی سے نکل جاتا ہو تو سارا پانی نکالنا ضروری ہے اور اگر پانی زیادہ ہے تو سو ڈول نکالنا کافی ہے۔ ۱ ؎ حسب سوال جب کہ دو مہینے سے اس کا پانی لوگ غیر مذہب کے استعمال کر رہے ہیں تو یقینی بات ہے کہ بہت زیادہ پانی نکل چکا ہے،لہذا امام صاحب پر کیا الزام ہے؟ایک ہی وقت میں زیادہ پانی نکال کر کنویںکو پاک کرنا بہتر ہے،لیکن اگر بتدریج بھی نکالا گیا اور بہت زیادہ نکالا گیا تو کنواں پاک ہو گیا ، ۲ ؎ خواہ پانی نکالنے والے کوئی ہوں، لہذا کنواں پاک ہے اور سب کی نماز صحیح ہوگئی۔فقط، و اللہ تعالی اعلم وعلمہ اتم۔
کنویں میں کتا گرا اور زندہ نکلا تو کنواں پاک کیسے ہوگا؟
(۱۱۱)س:…ایک کنویں میں کتا گر گیا اور آدھے گھنٹے کے بعد زندہ نکالا گیا،کنویں میں گیارہ ہاتھ پانی تھا دوسرے روز چھ ہاتھ نکالا گیا، لیکن یہاں کہ مولوی صاحب کہتے کہ کنواں پاک نہیں ہوا۔حنفی مذہب کے موافق کتنا پانی نکالنے سے کنواں پاک ہوگا؟
ج:…حامدا ومصلیا، الجواب وباللہ التوفیق:کتا مثل سور کے نجس العین نہیں ، ۱ ؎
لیکن اس کا لعاب ناپاک ہے،اس لئے اس کے زندہ نکل آنے سے بھی کنواں ناپاک ہوجاتا ہے ،جب کہ اس کا منھ پانی میں لگا ہواور ناپاک کنویں کا سارا پانی نکال سکتے ہوں تو نکالنا ضروری ہے اور اگر کنویں میں اس قسم کا سوت ہو کہ جس طرح پانی نکلتا جاتا ہے اسی طرح دوسرا پانی آتا جاتا ہے اور پانی اندر کم نہیں ہوتا، یا سوت تو نہیں ،لیکن پانی اتنا زیادہ ہے کہ اس کا نکالنا مشکل ہے تو تین سو ڈول نکالنا حنفی مذہب کے موافق کا فی ہے،اگر چھ ہاتھ پانی نکالنے میں تین سو ڈول نکل