الجواب صحیح الجواب صحیح کتبہ الاحقر محمد نظام الدین غفرلہٗ
سید احمد علی سعید سید مہدی حسن مفتی u
نائب مفتی uمفتی u ۳؍۱؍۱۳۸۶ھ
رشتہ بیعت قائم کرلینے کا حکم
سوال:کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اللہ تعالیٰ کے اعتبار سے میں کونسا طریقہ اختیار کرلوں جن کے ذریعہ سے خدا بھی خوش رہے اور اس کے رسول بھی خوش رہیں اور میں ایسی جگہ کی تلاش میں ہوں جو کہ مجھے یکسوئی ہوتاکہ میں خدا کو اچھی طرح سے یادکرسکوں نیز میں ایسی لڑکی سے شادی کرنا چاہتاہوں جو صوم وصلوٰۃ کی پابند ہو اور پاکدامن ہو نیز ابھی چاہتا ہوں کہ آپ حضرات کوشش کراکے میری شادی اچھی طرح کرادیں تو بہت بہتر ہوگا میں لڑکی کے تمام خرچ کا ذمہ دار ہوں مہر اس شرط پر ہوگی جو حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے صاحبزادی کا مقرر ہوئے ہیں اس مہر کو دینے کے لیے تیار ہوں ۔ابھی ابھی۔
الجواب وباﷲ التوفیق
جواب:عالم دین متبع سنت شیخ ومحقق مصلح اخلاق سے رشتہ بیعت مضبوط کرلو اور پوری اتباع کرو اس سے اپنے احوال کہو اور اس کی ہدایت کے مطابق پورا پورا عمل کرو ذرا بھی خود رائی و شبہ نہ کرو تو خدا بھی خوش اور رسول بھی خوش ہوں گے اور انہی کی برکت سے ایسی جگہ رشتہ مل جائے گا کہ یکسوئی کے ساتھ خدا کی عبادت میں لگ جائوگے آپ کے لیے یہی طریقہ صحیح ہے باقی چیزوں کے لیے دعا کرتاہوں کہ یہی اپنے اختیار میں ہے۔فقط واللہ تعالیٰ اعلم۔
الجواب صحیح الجواب صحیح کتبہ الاحقر محمد نظام الدین غفرلہٗ
محمود عفی عنہ سید احمد علی سعید مفتی u، ۱۰؍۵؍۱۳۸۷ھ
علم الیقین ،عین ُالیقین ،حق الیقین،میں فرق
سوال:علم الیقین عین الیقین وحق الیقین انکی علاحدہ علاحدہ تعریف مطلوب ہے۔
الجواب وباﷲ التوفیق
جواب: تفسیر روح البیان میں ہے تحت قولہ تعالیٰ اذقال ابراہیم رب ارنی کیف تحی الموتٰی الایہ والفرق ان علم الیقین ہو المستفاد من الاخبار الصادقۃ وعین الیقین ہو المعانیۃ لا مرتبہ فیہ قال