پیشاب سے بنا ہوا نمک ناپاک ہے:
سوال: پیشاب کو پکاتے پکاتے کھار نکال لیتے ہیں، یہ پیشاب کا نمک ہے، یہ پاک اور حلال ہوگا یانہیں، اور تبدیل ماہیت کیوں نہیں ہوگئی۔اگر نجس ہے تو تین بار پانی میں گھول کر تہ نشین کرلینے سے پاک ہوجائیگا یا نہیں؟
الجواب: پیشاب کا نمک ناپاک ہے، اور اس میں قلب ماہیت بھی نہیں ہوا چنانچہ طاہر نہیں ہے،
املاہ بلسانہ خلیل احمد عفی عنہ
خنزیر کی چربی سے بنے ہوئے صابن کا حکم:
سوال: خنزیر کی چربی کا صابن پاک ہے یا نہیں، جیسا کہ غیر مذبوح کی چربی کے صابن کو پاک کہا ہے؟
الجواب: خنزیر کی چربی کے صابن میں حکم روایات مختلف پایا جاتا ہے، مگر اقوی اور اقیس نجاست ہے، درمختارمیں ہے ’’ویطھر زیت تنجس بجعلہ صابونا بہ یفتی للبلوی (درمختار ۳؎) وعبارۃ المجتبی جعل الدھن النجس فی صابون یفتی بطھارتہ لانہ تغیر والتغیر یطھّر عند محمد ویفتی بہ للبلوی انتہی۔ وظاہرہ ان دھن المیتۃکذلک لتعبیرہ بالنجس دون المتنجس الاان یقال ھوحا صل بالنجس لان العادۃ فی الصابون وضع الزیت دون بقیۃ الادھان۔ تامل۔ ثم رأیت فی شرح المنیۃ مایؤید الاول حیث قال وعلیہ یتفرع مالو وقع الانسان اوکلب فی قدرالصابون فصار صابونا یکون طاہر التبدل الحقیقۃ۔ ثم اعلم ان العلۃ عند محمد ھی التغیر و انقلاب الحقیقۃ وانہ یفتی بہ للبلوی کما علم ۱؎ مما مر‘‘۔ اس عبارت سے واضح ہے کہ یہ حکم عموم بلوی کی وجہ سے دیا گیا ہے، اور خنزیر کی چربی میںکوئی بلویٰ نہیں ، لہٰذا اس کا صابون ناپاک رہیگا، اسی واسطے (صاحب) درمختار نے لفظ تنجس اختیار کیا ہے۔
املاہ خلیل احمد عفی عنہ
تبدیل ماہیت کی تعریف:
سوال: تبدیل ماہیت کی کیا تعریف ہے، اگر صابون بنجانے سے تبدیل ماہیت ہوجاتی ہے تو تریاق الافاعی میں بھی لحم افاعی کی تبدیل ماہیت ہوجانی چاہیے، کیونکہ جیسے صابون میں خواص اجزاء مفردہ باقی نہیں رہے، ایسے ہی تریاق الافاعی میں بھی نہیں رہے، فان اللحم الافاعی سم والتریاق علاج لسم، اور اگر تبدیل خواص سے تبدیل ماہیت نہیں ہوتی تو صابون بھی پاک نہ ہونا چاہیے، قد صرح الشامی بنجاستہ تریاق الافاعی ۳۱۱؎ جلد اول۔
الجواب: درمختار ۲؎میں ہے ’’لا یکون نجساً رماد قذ روالا لزم نجاسۃ الخبز فی سائر الامصار ولا ملح کان حماراً او خنز یراً ولا قذروقع فی بیر فصار حمأۃ لانقلاب العین بہ یفتی، علامہ شامی ۳؎ نے اس پر تحریر فرمایا ہے ،
لان الشرع رتب وصف النجاسۃ علی تلک الحقیقۃ وتنتفی الحقیقۃ بانتفاء بعض اجزاء مفھو مہا فکیف بالکل