ناک کے اوپر حصہ میں پانی پہنچانے کا حکم
سوال:کسی شخص کو روزے کی حالت میں احتلام ہوا روزہ کی حالت میں اس نے غسل کرتے وقت غرغرہ نہیں کیا اور نہ ناک کے نرم حصہ تک اس نے پانی پہنچایا تو اس کا غسل ہوا یا نہیں؟ اور اس طرح غسل کرکے اس نے نماز پڑھائی تو نماز درست ہوئی یا نہیں؟
الجواب حامداً و مصلیاً ومسلماً:روزہ دار کے لئے غرغرہ کرنااور ناک کے نرم حصہ میں پانی پہنچانے کا حکم نہیں ہے کہ روزہ ٹوٹنے کا اندیشہ ہے ۔ لہذا جونماز پڑھائی ہے وہ صحیح ہے اعادہ کی حاجت نہیں واللہ اعلم ۔
(فتاویٰ رحیمہ ج۵؍۱۹۸)
وضاحت: صحیح طریقہ یہ ہے بحالت روزہ غر غرہ توہرگز نہ کرے لیکن منہ بھر کے کلی اس طرح کرے کہ پانی حلق میں نہ جائے اور ناک میں بھی پانی دے لیکن مبالغہ نہ کرے یعنی اوپر کو پانی نہ چڑھائے ۔
روزے میں اگر بتی کے دھوئیں کا حکم
سوال:اگر کوئی شخص اگر بتی جان بوجھ کر سونگھے تو اس کا روزہ فاسد ہوگا یا نہیں؟
الجواب حامداً و مصلیاً ومسلماً:روزہ یا د ہوتے ہوئے دھواں قصدا حلق کے نیچے لے جانے کی صورت
میں روزہ فاسد ہو جائیگا ۔ ( شامی ج۲ ص ۱۰۶)
مسئلہ: بلا اختیار موٹر وغیرہ کا دھنواں یا غبار ناک و منہ کے اندر چلاجائے تو اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا ۔
(فتاوی محمودیہ ج۱۰؍۱۵۶؍۱۵۷)
نابالغ روزہ توڑدے تو اس کی قضاء کا حکم
مسئلہ : اگر نابالغ روزہ توڑ دے تو اس کی قضا ء رکھوانا ضروری نہیں ‘ نماز توڑ ے تو دوبارہ پڑھوانا واجب ہے ‘ سات برس کا ہو تو زبانی کہا جائے اور دس برس کا ہو تو مار کر نماز پڑھائی جائے ۔
(ملخصا من احسن الفتاوی ج۴؍۴۴۰)
قضاء رمضان کے لئے نیت کرنا ضروری ہے
سوال: ایک شخص کے ذمہ رمضان کے چند روزوں کی قضاء باقی ہے ان کے ادا کئے بغیر پہلے نفلی روزے رکھتا ہے آیا اس کے وہ نفلی روزے ہوں گے یا رمضان