١ وقال الشافعی لا یجب لانہ متولد من الحیوان فاشبہ الابریسم ٢ ولنا قولہ علیہ السلام فی العسل العشر ٣ ولان النحل یتناول من الانوار والثمار وفیہما العشر فکذا فیما یتولد منہا بخلاف دود القزلانہ یتناول الاوراق ولا عشر فیہا

ترجمہ: ١ امام شافعی نے فر ما یا کہ شہد میں عشر واجب نہیں ہے ، اس لئے کہ حیوان سے پیدا ہو تا ہے تو وہ ریشم کے مشابہ ہو گیا ۔
تشریح : امام شافعی کے یہاں شہد میں عشر نہیں ہے ۔موسوعہ میں ہے۔ قال الشافعی : لا صدقة فی العسل ۔( موسوعة امام شافعی ، باب أن لا زکوة فی العسل ، ج رابع ، ص ١٤٠، نمبر ٤١١٧) اس عبارت میں ہے کہ شہد میں عشر نہیں ہے ۔اس کی دلیل عقلی یہ فر ما تے ہیں کہ شہد مکھی سے پیدا ہو تا ہے جو حیوان ہے ، اس لئے اس میں عشر نہیں ہے ، جس طرح ریشم حیوان یعنی کیڑے سے پیدا ہو تا ہے تو اس میں عشر نہیں ہے ، اسی طرح شہد میں بھی عشر نہیں ہو گا ۔
وجہ : (١)اس حدیث میں ہے ۔ أن معاذا لما أتی الیمن أتی العسل و أوقاص الغنم فقال : لم أؤمرفیھا بشیء ۔( مصنف ابن ابی شیبة ، باب من قال لیس فی العسل زکاة ،ج ثانی ، ص ٣٧٣، نمبر ١٠٠٥٥)اس حدیث میں ہے کہ حضور نے حضرت معاذ کو شہد کے بارے میں کچھ حکم نہیں فر ما یا تھا ، اس لئے اس میں کچھ لازم نہیں ہو گا ۔ (٢)عن علی قال لیس فی العسل زکاة ( سنن للبیھقی ، باب ما ورد فی العسل ج رابع ص٢١٤،نمبر٧٤٦٧ مصنف عبد الرزاق ، باب صدقة العسل ، ج رابع ، ص ٥٢، نمبر٦٩٩٥ مصنف ابن ابی شیبة ، باب من قال لیس فی العسل زکاة ،ج ثانی ، ص ٣٧٣، نمبر ١٠٠٥٦) اس اثر میں ہے کہ شہد میں کچھ نہیں ہے ۔
ترجمہ: ٢ اور ہماری دلیل حضور علیہ السلام کا قول ہے کہ شہد میں عشر ہے ۔ یہ حدیث گزر چکی ہے ۔ عن ابی ھریرة قال کتب رسول اللہ ۖ الی اھل الیمن أن یؤخذ من العسل العشر ۔( سنن للبیھقی ، باب ما ورد فی العسل ج رابع ص ٢١٢،نمبر٧٤٥٩ مصنف عبد الرزاق ، باب صدقة العسل ، ج رابع ، ص ٥٤، نمبر ٧٠٠٢) اس حدیث میں ہے کہ شہد میں عشر لیا جائے۔
ترجمہ: ٣ اور اس لئے کہ شہد کی مکھی شگوفوں اور پھلوں کو چوستی ہے اور ان دونوں میں عشر ہے اس لئے شہد میں بھی عشر ہو گا جو ان دونوں سے پیدا ہو تا ہے ، بر خلاف ریشم کے کیڑوں کے ، کیونکہ یہ کیڑے پتیاں کھاتے ہیں اور پتیوں میں عشر نہیں ہے ]اس لئے ریشم میں بھی عشر نہیں ہو گا [
تشریح : یہ دلیل عقلی ہے کہ شہد کی مکھی پھلوں اور شگوفوں سے کھاتی ہے اور اس سے شہد پیدا کر تی ہے ، اور پھل اور شگوفوں میں عشر ہے اس لئے شہد میں بھی عشر ہو نا چاہئے ، اس کے بر خلاف ریشم کا کیڑا شہتوت کا پتہ کھا تا ہے اور اس سے ریشم پیدا کر تا ، اور پتوں