ہریرۃ رضي اللّٰہ عنہ أن رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم قال: إن للصلاۃ أولاً واٰخراً وإن أول وقت الفجر حین یطلع الفجر واٰخرہ حین تطلع الشمس۔ (بدائع الصنائع ۱؍۳۱۵ زکریا)
قال العلامۃ الکشمیريؒ: یستحب التغلیس في الفجر والتعجیل في الظہر إذا اجتمع الناس ولعل ہذا التغلیس کان في رمضان خاصۃ، وہکذا ینبغي عندنا إذا اجتمع الناس وعلیہ العمل في دار العلوم بدیوبند من عہد الأکابر۔ (فیض الباري ۲؍۱۳۶، کذا في فتح الملہم ۳؍۱۲۱) فقط واللہ تعالیٰ اعلم
کتبہ: احقر محمد سلمان منصورپوری غفرلہ ۲۲؍۴؍۱۴۲۱ھ
الجواب صحیح: شبیر احمد عفا اللہ عنہ
رمضان میں نماز فجر کے لئے کب کھڑے ہوں؟
سوال(۱۱):- کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیانِ شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ: فجر کی نماز میں اذان کے بعد جماعت کے لئے کتنی دیر بعد کھڑا ہونا چاہئے؟
باسمہٖ سبحانہ تعالیٰ
الجواب وباللّٰہ التوفیق: فجر کی اذان کے بعد بھی رمضان المبارک میںاتنا توقف کرنا چاہئے کہ بآسانی لوگ ضروریات سے فارغ ہوکر مسجد میں جمع ہوجائیں۔ (مستفاد: فتاویٰ دارالعلوم دیوبند ۲؍۴۵)
عن جابر بن عبد اللّٰہ رضي اللّٰہ عنہ أن رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم قال لبلال: واجعل بین أذانک وإقامتک قدر ما یفرغ الآکل من أکلہ والشارب من شربہ، والمعتصر إذا دخل لقضاء حاجتہ الخ۔ (سنن الترمذي رقم: ۱۹۵، مشکاۃ المصابیح رقم: ۶۴۷) فقط واللہ تعالیٰ اعلم
کتبہ: احقر محمد سلمان منصورپوری غفرلہ
۱۶؍۹؍۱۴۱۳ھ
نماز فجر میں قعدۂ اخیرہ کے درمیان سورج نکل آیا؟
سوال(۱۲):- کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیانِ شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ: ایک شخص تنہا فجر کی نماز پڑھ رہا ہے اور قعدہ اخیرہ میں ہے کہ سورج نکل آیا اس کی نماز ہوئی یا نہیں؟
باسمہٖ سبحانہ تعالیٰ
الجواب وباللّٰہ التوفیق: نماز فجر کے دوران اگر سلام پھیرنے سے قبل سورج نکل آیا تو وہ نماز باطل ہوجائے گی، بعد میں اس کی قضا لازم ہوگی۔
عن عقبۃ بن عامر الجہني رضي اللّٰہ عنہ یقول: کان رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم نہانا أن نصلي حین تطلع الشمس بازغۃ حتی ترتفع۔ (صحیح مسلم، الصلاۃ / باب الأوقات التي نہی عن الصلاۃ فیہا ۱؍۲۷۶ رقم: ۸۳۱)
قولہ: بخلاف الفجر أي فإنہ لا یؤدي فجر یومہ وقت الطلوع لأن وقت الفجر کلہا کامل فوجبت کاملۃ فتبطل بطرو الطلوع الذي ہو وقت الفساد۔ (شامي ۱؍۳۷۳ کراچی، شامي، کتاب الصلاۃ ۲؍۳۳ زکریا، البحر الرائق ۱؍۲۵۱، بدائع الصنائع ۱؍۳۲۷ کراچی)
ولا یتصور أداء الفجر مع طلوع الشمس عندنا، حتی لو طلعت الشمس وہو في خلال الصلاۃ تفسد صلاتہ عندنا۔ (بدائع الصنائع، الصلاۃ / بیان الوقت المکروہ ۱؍۳۲۹ زکریا) فقط واللہ تعالیٰ اعلم
کتبہ: احقر محمد سلمان منصورپوری غفرلہ۲۲؍۴؍۱۴۱۴ھ
الجواب صحیح: شبیر احمد عفااللہ عنہ
طلوعِ آفتاب کے وقت فجر کی نماز ادا کرنا؟