جب روزہ افطار کرنے لگے تو یہ پڑھے:
اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ لَکَ صُمْتُ وَبِکَ اٰمَنْتُ وَعَلَیْکَ تَوَکَّلْتُ وَعَلٰی رِزْقِکَ اَفْطَرْتُ۔ (مشکوٰۃ)
اے اللہ میں نے تیرے ہی لیے روزہ رکھا اور تجھ پر بھروسہ کیااور تیرے ہی دیئے ہوئے رزق پر روزہ کھولا۔


افطار کے بعد یہ پڑھے:
ذَھَبَ الظَّمَأُ وَابْتَلَّتِ الْعُرُوْقُ وَثَبَتَ الْاَجْرُ اِنْ شَآئَ اللّٰہُ۔ (ابو داود)
پیاس چلی گئی اور رگیں ترہوگئیں اور ان شاء اللہ ثواب ثابت ہوگیا۔


اگر کسی کے یہاں افطار کرے تو ان کو یہ دعا دے:
اَفْطَرَعِنْدَکُمُ الصَّائِمُوْنَ وَاَکَلَ طَعَامَکُمُ الْاَبْرَارُ وَصَلَّتْ عَلَیْکُمُ الْمَلٰئِکَۃُ۔ (حصن)
’’تمہارے پاس روزہ دار افطار کریں اور نیک بندے تمہارا کھانا کھائیں اور فرشتے تم پر رحمت بھیجیں۔ ‘‘


جب کپڑا پہنے تو یہ پڑھے:
اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ کَسَانِیْ ھٰذَا وَرَزَقَنِیْہِ مِنْ غَیْرِ حَوْلٍ مِّنِیْ وَلَا قُوَّۃٍ۔
سب تعریف اللہ کے لیے جس نے یہ کپڑا مجھے پہنایا اور نصیب کیا بغیر میری کوشش اور قوت کے۔
کپڑا پہن کر اس کو پڑھ لینے سے اگلے پچھلے گناہ معاف ہوجاتے ہیں۔ (مشکوٰۃ)


جب نیا کپڑا پہنے تو یہ پڑھے:
اَللّٰھُمَّ لَکَ الْحَمْدُ کَمَا کَسَوْتَنِیْہِ اَسْئَلکَ خَیْرَہٗ وَخَیْرَ مَاصُنِعَ لَہٗ وَاَعُوْذُ مِنْ شَرِّہٖ وَشَرِّمَاصُنِعَ لَہُ۔ (مشکوٰۃ)
اے اللہ تیرے ہی لیے سب تعریف ہے، جیسا کہ تو نے یہ کپڑا مجھے پہنایا، میں تجھ سے اس کی بھلائی کا اور اس چیز کی بھلائی کا سوال کرتا ہوں، جس کے لیے یہ بنایا گیا ہے اور میں تیری پناہ چاہتا ہوں اس کی برائی سے اور اس چیز کی برائی سے جس کے لیے یہ بنایا گیا ہے۔


نیا کپڑا پہننے کی دوسری دعا:حضرت عمرؓ فرماتے ہیں رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ جو شخص نیا کپڑا پہنے تو یہ دعا پڑھے:
اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ کَسَانِیْ مَا اُوَارِیْ بِہٖ عَوْرَتِیْ وَاَتَجَمَّلُ بِہٖ فِیْ حَیَاتِیْ۔
سب تعریف اللہ کے لیے ہے جس نے مجھے کپڑا پہنایا، جس میں اپنی شرم کی جگہ چھپاتا ہوں