قعدۂ اخیرہ میں سلام سے پہلے تین تسبیحات کے بقدر خاموش رہنا؟
سوال(۳۸۶):- کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیانِ شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ: ایک شخص تشہد، درود شریف اور دعاء کے بعد بقدر تین تسبیحات خاموش رہتا ہے، تو تاخیر واجب سلام کی وجہ سے سجدۂ سہو واجب ہوگا یا نہیں، اور اگر سجدۂ سہو واجب ہے تو پھر سلام کے لئے دوبارہ تشہد اور درود شریف وغیرہ پڑھنا ضروری ہے یا نہیں؟
باسمہٖ سبحانہ تعالیٰ
الجواب وباللّٰہ التوفیق: بالقصد تین تسبیحات کے بقدر تاخیر سلام کی وجہ سے اس پر سجدۂ سہو واجب ہے، اور سجدۂ سہو کے بعد دوبارہ تشہد اور درود پڑھے۔
وإذا قعد المصلي في صلا تہ وتشہد ثم شک أنہ صلی ثلاثاً أو أربعاً حتی شغلہ ذٰلک عن التسلیم ثم استیقن أنہ صلی أربعاً فأتم صلاتہ فعلیہ سجدۃ السہو۔ (الفتاویٰ الہندیۃ ۱؍۱۲۶-۱۳۱، کذا في الفتاویٰ التاتارخانیۃ ۲؍۴۳۲ رقم: ۲۸۸۶ زکریا)
ویجب أیضاً تشہد وسلام لأن سجود السہو یرفع التشہد ویأتي بالصلاۃ علی النبي صلی اللّٰہ علیہ وسلم والدعاء في القعود الأخیر في المختار۔ (شامي ۲؍۷۹ کراچی، ۲؍۵۴۱ زکریا، الفتاویٰ الہندیۃ ۱؍۱۲۵، تبیین الحقائق ۱؍۴۷۲ بیروت) فقط واللہ تعالیٰ اعلم
کتبہ: احقر محمد سلمان منصورپوری غفرلہ ۲۸؍۴؍۱۴۲۱ھ
الجواب صحیح: شبیر احمد عفا اللہ عنہ
قعدۂ اخیرہ میں التحیات پڑھ کر بھول سے اٹھا اور پورا کھڑا ہونے سے پہلے بیٹھ گیا؟
سوال(۳۸۷):- کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیانِ شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ: ایک شخص نماز پڑھ رہا تھا کہ قعدۂ اخیرہ میں التحیات پڑھ کر کھڑا ہوگیا، اور ابھی سیدھا ہونے