ترجمہ: اے اللہ ! جس نے مجھے کھانا کھلاىا ،آپ اس کو (اور) کھلائىے اور جس نے مجھے سىراب کىا، آپ اسے (اور) سىراب کىجئے (مسلم)
کپڑے بدلتے وقت
اَلْحَمْدُ لِلّٰهِ الَّذِي كَسَانِيْ هٰذَا وَرَزَقَنِيْهِ مِنْ غَيْرِ حَوْلٍ مِّنِّي وَلَا قُوَّةٍ
ترجمہ: تعرىف اللہ کى ہے جس نے مجھے ىہ پہناىا اور مىرى کسى قوت اور طاقت کے بغىر مجھے عطا فرماىا (حصن المسلم)
جب کسى دشمن کا خوف ہو
اَللّٰھُمَّ اِنَّا نَجْعَلُكَ فِيْ نُحُوْرِهِمْ وَنَعُوْذُبِكَ مِنْ شُرُوْرِهِمْ
ترجمہ: اے اﷲ! ہم تجھى کو ان کے مقابل کرتے ہىں اور ان کے شر سے تىرى پناہ مانگتے ہىں (ابن السنى 89)
جب کوئى کام مشکل معلوم ہو
اَللّٰهُمَّ لَا سَهْلَ اِلَّا مَا جَعَلْتَه سَهْلًا وَّاَنْتَ تَجْعَلُ الْحَزَنَ سَهْلًا اِذَا شِئْتَ
ترجمہ: اے اﷲ! کوئى چىز آسان نہىں مگر جس کو تو آسان بنائے اور تو مشکل کو بھى آسان کردىتا ہے جب چاہے (حصنِ حصىن)
نىا کپڑا پہنتے وقت
اَللّٰهُمَّ لَكَ الْحَمْدُ اَنْتَ كَسَوْتَنِيْهِ، اَسْاَلُكَ مِنْ خَيْرِهِ وَخَيْرِ مَا صُنِعَ لَهُ، وَاَعُوذُ بِكَ مِنْ شَرِّهِ وَشَرِّ مَا صُنِعَ لَهُ
ترجمہ: اے اللہ ! آپ ہى کى تعرىف ہے جىسے کہ آپ نے مجھے ىہ لباس پہناىا، مىں آپ سے اس کپڑے کى بھلائى مانگتا ہوں اور اس کام کى بھلائى مانگتا ہوں جس کے لئے ىہ بناىا گىا، اور مىں ا س کے شر سے پناہ مانگتا ہوں اور جس کام کے لئے بناىا گىا اس کى بُرائى سے پناہ مانگتا ہوں (حصن المسلم)
جب بازار مىں داخل ہو
لَاۤ اِلٰهَ اِلاَّ اللّٰهُ وَحْدَهُ لاَ شَرِيْكَ لَهُ، لَهُ الْمُلْكُ، وَلَهُ الْحَمْدُ، يُحْيِيْ وَيُمِيْتُ، وَهُوَ حَيٌّ لَّا يَمُوْتُ، بِيَدِهِ الْخَيْرُ، وَهُوَ عَلٰى كُلِّ شَيْءٍ قَدِيْرٌ
ترجمہ: اللہ کے سوا کوئى معبود نہىں، وہ اىک ہے اس کا کوئى شرىک نہىں، سلطنت اسى کى ہے وہ زندہ کرتا ہے اور موت دىتا ہے، اور وہ خود زندہ ہے جسے موت نہىں آئے گى، اسى کے ہاتھ مىں بھلائى ہے اور وہ ہر چىز پر قدرت رکھتا ہے (حصن المسلم)
جب کسى سوارى پر سوار ہو
سُبۡحٰنَ الَّذِیۡ سَخَّرَ لَنَا ہٰذَا وَ مَا کُنَّا لَہٗ مُقۡرِنِیۡنَ ﴿ۙ۱۳﴾ وَ اِنَّاۤ اِلٰی رَبِّنَا لَمُنۡقَلِبُوۡنَ ﴿۱۴﴾ سورۂ زخرف 13،14
ترجمہ: پاک ہے وہ ذات جس نے ىہ سوارى ہمارے لئے مسخر کر دى، اور ہم اس کو قابو مىں لانے والے نہ تھے، اور ہم اپنے پروردگار ہى کى طرف لوٹنے والے ہىں۔
سفر کى دعا
اَللّٰہُ اَکْبَرُ، اَللّٰہُ اَکْبَرُ، اَللّٰہُ اَکْبَرُ، اَللّٰهُمَّ اِنَّا نَسْاَلُكَ فِي سَفَرِنَا هٰذَا الْبِرَّ وَالتَّقْوٰى، وَمِنَ العَمَلِ مَا تَرْضٰى، اَللّٰهُمَّ اَنْتَ الصَّاحِبُ فِي السَّفَرِ وَالخَلِيْفَةُ فِي الْاَهْلِ وَالْمَالِ وَالْوَلَدِ ، اَللّٰهُمَّ اِنِّيْ اَعُوْذُ بِكَ مِنْ وَّعْثَاءِ السَّفَرِ، وكَآبَةِ المَنْظَرِ، وَسُوءِ المُنْقَلَبِ في المَالِ والاَهْلِ وَالْوَلَدِ ،اَللّٰهُمَّ هَوِّن عَلَيْنا سَفَرَنَا هٰذَا، وَاطْوِ عَنَّا بُعْدَهٗ
ترجمہ: اللہ سب سے بڑا ہے، اللہ سب سے بڑا ہے،اللہ سب سے بڑا ہے، اے اللہ ! آپ ہى ہمارے سفر مىں ہمارے ساتھ ہىں، اور آپ ہى ہمارے پىچھے ہمارے گھر والوں اور مال و اولادکے محافظ ہىں۔ اے اللہ ! ہم آپ سے اپنے اس سفر مىں نىکى اور تقوىٰ کى توفىق مانگتے ہىں، اور اىسے عمل کى جس سے آپ راضى ہوں۔ اے اللہ ! مىں آپ کى پناہ چاہتا ہوں سفر کى مشقت سے اور غم مىں ڈالنے والے منظر سے، اور بُرى حالت مىں گھر والوں اور مال واولاد کے پاس واپس لوٹنے سے۔ اے اللہ ! ہمارے لئے اس سفر کو آسان کر دىجئے اور اس کى دورى کو ہمارے لئے لپىٹ دىجئے۔
جب کسى نئى بستى مىں داخل ہو
اَللّٰهُمَّ اِنِّي اَسْئَلُكَ خَيْرَ هٰذِهِ الْقَرْيَةِ وَخَيْرَ اَهْلِهَا وَخَيْرَ مَافِيْهَا وَاَعُوْذُبِكَ مِنْ شَرِّهَا وَشَرِّ اَهْلِهَا وَشَرِّ مَا فِيْهَا
ترجمہ: اے اللہ ! مىں آپ سے سوال کرتا ہوں کہ مجھے اس بستى کى، اس کے رہنے والوں کى اور جو کچھ اس بستى مىں ہے اس کى بھلائى نصىب ہو، اور مىں آپ کى پناہ مانگتا ہوں اس کى ، اس کے رہنے والوں کى اور جو کچھ اس بستى مىں ہے اس کى بُرائى سے۔
بىمار کےلئے نبى﷑ کى دعا
ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ ؓ فرماتی ہیں کہ رسول کریم ﷺ (کا یہ طریقہ تھا) جب ہم میں سے کوئی بیمار ہوتا آپ ﷺ اس پر داہنا ہاتھ پھیرتے اور یہ (دعا) فرماتے ۔
اَذْهِبِ الْبَاْسَ رَبَّ النَّاسِ وَاشْفِ اَنْتَ الشَّافِي لَا شِفَآءَ اِلَّا شِفَآؤُكَ شِفَآءٌ لَّا يُغَادِرُ سَقَمًا
ترجمہ: اے لوگوں کے پروردگار! بیماری دور کر دے اور شفا دے تو ہی شفا دینے والا ہے۔ تیرے سوا کسی کی شفاء ایسی نہیں جو بیماری کو دور کر دے۔ (بخاری ومسلم)
نکاح کى مبارکباد
بَارَكَ اللّٰهُ لَكَ وَبَارَكَ عَلَيْكَ وَجَمَعَ بَيْنَكُمَا فِيْ خَيْرٍ
ترجمہ: اللہ تعالىٰ تمہارے لئے ىہ نکاح مبارک فرمائے اور تم پر برکتىن نازل فرمائے اور تم دونوں کو خىر وخوبى کے ساتھ اکٹھا رکھے (حاکم)