]سامنے لٹکانا[حضرت ھشام فرماتے ہیں : میں نے حضرت عبداللہ بن زبیر ﷜کو دیکھا کہ اُنہوں نے عمامہ باندھا ہوا تھا اور عمامہ کے دونوں شملے اپنے سامنے کی جانب لٹکائے ہوئے تھے۔عَنْ هِشَامٍ، قَالَ:رَأَيْتُ ابْنَ الزُّبَيْرِ مُعْتَمًّا قَدْ أَرْخَى طَرَفَيِ الْعِمَامَةِ بَيْنَ يَدَيْهِ۔(ابن ابی شیبہ :24977)
]ایک شملہ سامنے اور دوسرا پیچھے[حضرت عبد الرحمن بن عوف ﷜فرماتے ہیں کہ نبی کریمﷺنے میرا عمامہ باندھا اور اُس کاشملہ میرے سامنے اور پیچھے کی جانب چھوڑ دیا ۔عَمَّمَنِي رَسُولُ اللهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَسَدَلَهَا بَيْنَ يَدَيَّ وَمِنْ خَلْفِي۔(شعب الایمان :5839)عَنْ جَابِرٍ، قَالَ: أَخْبَرَنِي مَنْ رَأَى عَلِيًّا قَدْ اعْتَمَّ بِعِمَامَةٍ سَوْدَاءَ، قَدْ أَرْخَاهَا مِنْ بَيْنِ يَدَيْهِ، وَمِنْ خَلْفِهِ۔(ابن ابی شیبہ :24959)
]دائیں جانب کانوں کے پاس[حضرت ابوامامہ ﷜فرماتے ہیں :نبی کریمﷺجب کسی کو کہیں کا والی بناتے تو اُس کے سر پر عمامہ باندھتے اور اُس کا شملہ دائیں جانب کانوں کےپاس چھوڑ دیتے ۔عَنْ أَبِي أُمَامَةَ قَالَ:«كَانَ رَسُولُ اللهِ ﷺ لَا يُوَلِّي وَالِيًا حَتَّى يُعَمِّمَهُ، وَيُرْخِيَ لَهَا عَذَبَةً مِنْ جَانِبِ الْأَيْمَنِ نَحْوَ الْأُذُنِ»۔(طبرانی کبیر:7641)
شملہ کی مقدار کتنی ہونی چاہیئے :
اِس بارے میں مختلف اقوال احادیث میں ذکر کیے گئے ہیں :
(1)ایک ذراع ۔ (2) ایک بالشت ۔ (3)چار انگلیوں کے بقدر۔(عون المعبود :11/89)
ان میں سے کسی پر بھی عمل کرسکتے ہیں ، البتہ ”نصفِ ظَہر“ کم کم ہونا چاہیئے ، اِس سے زیادہ لمبا شملہ ”اِسبال فی العمامہ “ کے تحت داخل ہونے کی وجہ سے درست نہیں ۔ اِسبال فی العمامہ کی تفصیل آگے آرہی ہے ۔
]ایک ذراع[۔حضرت سلمہ بن وردان فرماتے ہیں کہ میں نے حضرت انس﷜کو سیاہ عمامہ پہنے ہوئے دیکھا جو اُنہوں نے بغیر ٹوپی کے باندھا ہوتھا اور اُس کا شملہ پیچھے کی جانب ایک ذراع کے بقدر چھوڑ رکھا تھا۔سَلَمَةُ بْنُ وَرْدَانَ، قَالَ:رَأَيْتُ عَلَى أَنَسٍ عِمَامَةً سَوْدَاءَ عَلَى غَيْرِ قَلَنْسُوَةٍ، وَقَدْ أَرْخَاهَا مِنْ خَلْفِهِ نَحْوًا مِنْ ذِرَاعٍ۔(ابن ابی شیبہ :24955)عُمَرُ بْنُ يَحْيَى قَالَ: " رَأَيْتُ وَاثِلَةَ بْنَ الْأَسْقَعِ مُعْتَمًّا قَدْ أَرْخَى عِمَامَتَهُ مِنْ خَلْفِهِ ذِرَاعًا۔(شعب الایمان:5843)
]ایک بالشت[۔اسماعیل ابن عبد الملک فرماتے ہیں کہ میں نے حضرت سعید بن جبیرکو دیکھا ہے وہ عمامہ باندھا کرتے تھے اور اُس کا شملہ پیچھے کی جانب ایک بالشت چھوڑا کرتے تھے۔وَكَانَ يَعْتَمُّ وَيُرْخِي لَهَا طرفا شبرا من ورائه۔(طبقات `