(یعنی چارحرکتوں کی مقدارمد) دونوں ہی جائزاوردرست ہیں۔
٭صلہ صغریٰ اورصلہ کبریٰ میں فرق :
صلہ صغریٰ اورصلہ کبریٰ میں فرق درجِ ذیل ہے:
(الف)صلہ کبریٰ میںضروری ہے کہ ’’ھائے ضمیر‘‘ کے بعدآنے والاحرف صرف ہمزہ ہو(مَالَہٗ أَخْلَدَہ)،جبکہ صلہ صغریٰ میں( ہمزہ کے سوا)کوئی بھی حرف آسکتاہے (مَاْلَہٗ یَتَزَ کَّیٰ)
(ب)صلہ کبریٰ چونکہ مدمنفصل کاملحق ہے لہٰذااس میں (مدمنفصل کی طرح) قصراورتوسط دونوں جائزہیں،جبکہ صلہ صغریٰ چونکہ مداصلی کاملحق ہے لہٰذااس میں(مداصلی کی طرح) صرف قصرہی ضروری ہے۔
مدِ فرعی جو’’سکون ‘‘کی وجہ سے ہو :
اس سے قبل صفحہ : ۶۰پریہ بات گذرچکی ہے کہ اسبابِ مدّ دوہیں :
(۱)حرفِ مدکے بعدہمزہ کی موجودگی، مدمتصل اورمدمنفصل جن کابیان گذرچکاہے ان دونوں کاسبب یہی ہے ،یعنی حرفِ مدکے بعدہمزہ کی موجودگی(جَٓائَ ۔ شَٓائَ)(یَٓا اَیُّھَا)
(۲)حرفِ مد کے بعدسکون کی موجودگی:اس سبب کی وجہ سے مدکی درجِ ذیل دوقسمیںوجودمیں آتی ہیں(۱) مدعارض للسکون(۲) مدلازم۔
(۱) مدّ عارض للسکون :
اس سے مرادیہ ہے کہ حرفِ مدکے بعدایساحرف ہو جواصل میں تومتحرک ہولیکن وقف کی وجہ سے ساکن ہوگیاہو،جیسے : اَلْعَاْلَمِیْنْ ۔ اَلْدِّیْنْ۔ نَسْتَعِیْنْ۔ اَلْمُسْتَقِیْمْ۔ اَلْحَسَنَاْتْ۔
٭ان تمام مثالوں میں کلمہ کاآخری حرف اصل میں متحرک تھا،لیکن اس پروقف کی وجہ سے