۲؍۸۶۸، بدائع الصنائع زکریا ۲؍۴۲۳، البحر الرائق کوئٹہ ۳؍۱۲) فعلیہ صدقۃ لکل ظفر نصف صاع الا ان یبلغ قیمۃ الطعام دماً فینقص ما شاء او یختار الدم۔ (غنیۃ الناسک ۲۶۰)
ناخون کا خود بخود ٹوٹ جانا
اگر کسی محرم کا ناخون خود بخود کٹ جائے یا ٹوٹ جائے یا اس طرح ٹوٹ کر تھوڑا بہت انگلی سے لگا رہے کہ اس میں دوبارہ بڑھوتری کی امید نہ ہو تو اس ناخون کو توڑ دینے سے کوئی چیز واجب نہیں ہوگی۔ ولو انکسر ظفرہ أو انقطع شظیہ أي قفلہ منہ فقطعہا أو قلعہا لم یکن علیہ شيئٌ۔ (مناسک ملا علی قاری ۳۳۱، ہندیہ ۱؍۲۴۴، ومثلہ فی البحر الرائق کوئٹہ ۳؍۱۲، تبیین الحقائق ۲؍۳۱۲)
