لئے اسے کھانے میں کوئی حرج نہیں ہے ۔ فقط و اللہ تعالی اعلم
{۲۵۳۰} مرغی کو ذبح کرنے کے بعد ابلتے ہوئے پانی میں ڈال کر پر نکالنا
سوال: مرغی کو ذبح کرنے کے بعد گرم پانی میں ڈال کر اس کے پر نکالے جاتے ہیں تو ایسی مرغی کا گوشت کھانا کیسا ہے؟ اور ذبح کرنے کے بعد اس کے گلے میں لگا ہوا خون دھو دیا جائے نیز آنتیں وغیرہ نکال کر گرم پانی میں ڈال کر اس کے پر نکالے جائیں تو اس کا کیا حکم ہے؟
الجواب: حامداً و مصلیاً و مسلماً… مرغی کو ذبح کرنے کے بعد اس میں موجود گندگی اور ناپاکی کو دور کر کے گرم پانی میں ڈال کر پر نکالے جائیں تو ایسے گوشت کو کھانا بلا شبہ درست ہے،اور ناپاکی کو دور کرنے سے پہلے گرم پانی میں ڈال کر اس کے پر نکالے جائیں تو اس کی دوصورتیں ہیں ۔
(۱) پانی گرم ہو جانے کے بعد اس میں مرغی ڈبو کر فوراً باہر نکال لی جائے ، مرغی اسمیں رکھ کر پانی کو اور جوش نہ دیا جائے تو اس صورت میں چونکہ گوشت تک ناپاکی کا اثر نہیں پہونچتا ہے صرف پر نکل جاتے ہیں لہٰذا اس طرح کرنا جائز ہے۔
(۲)دوسری صورت یہ ہے کہ مرغی کو گرم پانی میں ڈال کر پانی کو ابالا جائے تو چونکہ اس صورت میں پیٹ کی نجاست کا اثر گرمی کے اثر کی وجہ سے گوشت تک پہونچ جاتا ہے لہٰذا گوشت بھی ناپاک ہو جائے گا؛ اس لئے ایسے گرم پانی میں ڈال کر پر نکالی ہوئی مرغی کا گوشت کھانا جائز نہیں ۔ (طحطاوی ج:۱ فتح القدیر وغیرہ) فقط و اللہ تعالی اعلم