سجدۂ تلاوت:
جو سجدہ آیاتِ سجدہ کی تلاوت پر کیا جاتا ہے۔
سجدۂ سہو:
جو سجدہ نماز میں بھول اور اس کی تلافی کے لیے کیا جاتا ہے۔
سعی:
تیز چلنا، لیکن دوڑنے سے کم، صفا اور مروہ کے درمیان اسی طرح چلنے کا حکم ہے اور اسی لیے اس کو سعی کہتے ہیں ۔
سفر:
اپنی جائے اقامت سے مسافت ِ شرعی کے بقدر فاصلہ طے کرنے کی نیت سے نکلنا۔مسافت ِ شرعی تقریباً ۷۸؍کلومیٹر ہے۔
سدلِ ثوب:
سر اور کندھوں پر کپڑا ڈالنا، پھر اس کے کناروں کو دونوں جانب سے لٹکا دینا۔
سکنیٰ:
رہائش کی مستقل جگہ۔
سکوت:
قدرت کے باوجود کلام نہ کرنا۔
سلم:
وہ بیع جس میں قیمت نقد ادا کی جائے اور مبیع اُدھار ہو۔
سند:
وہ سلسلۂ روایت جس کے ذریعہ متن حدیث تک رسائی ہوتی ہے۔
سَمَک طافی:
وہ مچھلی جو اپنی طبعی موت مرنے کے بعد پانی کے اوپر تیرنے لگے۔
سنت:
وہ عمل جو نبی ٔ اکرم ﷺ سے ثابت ہو، مگر فرض و واجب نہ ہو۔ جیسے مسواک کرنا۔
٭٭٭٭٭٭٭٭
( ش )
شاب:
بلوغ سے چالیس سال تک کی عمر، چالیس کے بعد کا زمانہ ’’زمانۂ کہولت‘‘ کہلاتا ہے۔
شاہد:
گواہ، یعنی وہ شخص جوکسی واقعے کی مشاہدے یا کسی اور دلیل کی بنیاد پر خبردے۔