بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْم
تسہیل النحو
عربی عبارت صحیح پڑھنے کے ضروری قواعد
احقر محمد اختر عفا اﷲ عنہ عرض کرتا ہے کہ عربی عبارت کا صحیح پڑھنا جب ہی ممکن ہے کہ نحو کے قواعد زبانی یاد ہوں۔ لیکن اکثر حالات اس طرح نظر آتے ہیں کہ ہدایۃ النحو، کافیہ،شرح جامی میں جو تفصیل قواعد کی پڑھی جاتی ہے وہ صرف کتابوں ہی میں رہتی ہے۔ عبارت پڑھتے وقت یا وعظ کہتے وقت عربی عبارات میں ان قواعد کے زبانی یاد نہ ہونے کے سبب صرف اندازے سے کام لیا جاتا ہے۔ یقین اور وثوق سے عبارت کی صحت پر اعتماد نہیں ہوتا۔ اس لیے تقاضا ہوا کہ نحو کے ضروری ضروری قواعد اس طرح جمع کیے جائیں جو آسانی سے یاد ہوجائیں اور ان میں اصطلاحات کی مشکلات بھی نہ ہوں اور عبارت پڑھتے وقت یقین کے ساتھ اس کو صحیح پڑھا جاسکے۔ جو قواعد کتابوں میں چار پانچ صفحات میں تحریر ہیں اور طالبِ علم کا دماغ اس تفصیل کو حفظ کرنے سے عاجز اور قاصر ہو تا ہے ان قواعد کو اﷲ کی رحمت سے احقر نے چند سطروں میں جمع کیا ہے۔ اہل علم حضرات نے جس کی بے حد قدر فرمائی ہے۔ اﷲ تعالیٰ اس کا نفع عام و تام فرمائیں ۔ اور شرفِ حسن قبول عطا فرمائیں۔
نوٹ: اس رسالے میں اس بات کی کوشش کی گئی ہے کہ نئی نئی مثالیں قرآن وحدیث سے پیش کی جائیں تاکہ طلبائے کرام کو مشق بھی ہو، لطف بھی زیادہ آئے اور قرآن وحدیث کی برکتوں سے یہ قواعد یاد بھی ہو جائیں۔ اور ان کا استعمال کرنا عبارت میں آجائے۔
مؤلف
محمد اختر عفا اﷲ تعالیٰ عنہ