مقصد:اصول فقہ کے قواعد کی مدد سے ایسے تفصیلی دلائل تک رسائی، جن سے احکام
بنتے ہیں ۔
شرعی دلائل کی دو قسمں ہیں : ۱۔نصوص ۲۔غیر نصوص
مثالیں : کتاب وسنت، نصوص کی مثالیں ہیں ۔
نصوص سے نکلا ہوا قیاس، غیر نصوص کی مثال ہے ۔
استنباط کے طریقے : استنباط یعنی مسائل نکالنے کے دو طریقے ہیں :
۱۔ ـلفظی۲۔معنوی
الفاظ کے خاص وعام، مشترک ومؤول، حقیقت ومجاز ،اور دلالت واشارت وغیرہ سے احکام نکالنا طریقۂ لفظی ہے ۔
نص موجود نہ ہو تومنصوص علیہ حکم کو ایک علت کی بنا پر غیرمنصوص میں جاری کرنا طریقۂ معنوی پر قیاس ہے۔
اس اجمال کی تفصیل سات باب میں آرہی ہے :
باب اول: کتاب وسنت کی تعریف ۔
باب دوم : طریقۂ لفظیہ ( جس میں نصوص موجود ہونے کی مدد سے احکام بنتے ہیں )۔
باب سوم : سنت کی بحث۔
باب چہارم : اجماع۔
باب پنجم: قیاس واستحسان ( طریقۂ معنویہ جس میں نص کے نہ ہونے کے وقت احکام نکالے جاتے ہیں )۔
باب ششم: احکام ۔
باب ہفتم: محکوم علیہ۔