جہاں کے سارے کمالات ایک تجھ میں ہیں
تیرے کمال کسی میں نہیں مگر دو چار

سب سے پہلے مشیت کے انوار سے
نقش روئے محمد بنایا گیا
پھر اسی نقش سے مانگ کر روشنی
بزمِ کون و مکاں کو سجا یا گیا
وہ محمد ﷺ بھی احمد ﷺ بھی محمود بھی
ذاتِ مطلق کا شاہد بھی مشہود بھی
علم و حکمت میں وہ غیر محدود بھی
ظاہراً امیوں میں اٹھا یا گیا

لکھی نبیوں کی یوں میں نے ثنا اول سے آخر تک
محمد ﷺ لکھ دیا بس ہو گیا اول سے آخر تک