{دعـــوت تــلاوت سـے قـــبــل}
خدا کے نام سے جلسے کا ہم آغاز کرتے ہیں
وہی مالک ہے، ہم اس کے کرم پر ناز کرتے ہیں

آغاز ہو جلسے کا قرآں کی تلاوت سے
مسرور دلِ مؤمن ہو اس کی حلاوت سے

قرآں کی تلاوت سے یوں دل کو منور کر
اک آیت ِ قرآں پڑھ، اک راہ مقرر کر

اسی کے فضل سے آغاز کا انجام ہوتا ہے
اسی کی مہربانی سے جہاں کا کام ہو تاہے

تـــــلاوت کــــــے بــــعـــــد
ہے قو لِ خد ا ارشادِ نبی ﷺ فرمان نہ بدلا جائے گا
بد لے گا زمانہ لا کھ مگر قرآن نہ بدلاجائے گا