{بــــعـــدخــــطــــابـــت}
دل سے جوبات نکلتی ہے اثر ر کھتی ہے
پر نہیں طاقتِ پرواز مگر رکھتی ہے

آپ کا محکم عمل ہے قول پُر تنویرہے
اور قلم باطل کی فوجوں کے لئے شمشیر ہے
کیسی باطل سوز ان کی گرمیِ تقریر ہے
لعل و گوہر بار ان کا خامۂ تحریر ہے

نہ یہ رات ختم ہوتی نہ یہ بات ختم ہوتی
جو پیا س دل کی بجھتی تو کچھ اور بات ہوتی

سن کر بیان آپ کا حیران رہ گئے
نکلے نہیں کسی کے بھی ارمان رہ گئے