سبق (۱۰)
{مُرَکَّب کی قسمیں}

مرکب:وہ لفظ ہے جودو یا دو سے زائد لفظوںسے مل کر بنے اورایک سے زائد معنی بتائے، جیسے: عَبْدُاللّٰہِ (اللہ کا بندہ) ، رَسُوْلٌکَرِیْمٌ (مہربان رسول) ، اَللّٰہُ أَحَدٌ(اللہ ایک ہے) ،وغیرہ۔
مرکب کی دوقسمیں ہیں:(۱) مرکب ناقص (۲) مرکب تام ۔
مرکب ناقص: الفاظ کے مجموعہ سے سننے والے کو پوری بات سمجھ میں نہ آئے، تو اس کو مرکب ناقص کہتے ہیں جیسے عَبْدُاللّٰہِ ، رَسُوْلٌکَرِیْمٌ۔
مرکب تام: الفاظ کے مجموعہ سے سننے والے کو پوری بات سمجھ میں آجائے ، تو اسے مرکب تام کہتے ہیں، جیسے ذَہَبَ زَیدٌ (زید گیا)
یاکسی بات کی طلب معلوم ہو، جیسے إِیْتِ بِالْمَآئِ (پانی لا)
(پہلی بات سے سننے والے کو زید کے جانے کی خبر معلوم ہوئی ،اور دوسری بات سے معلوم ہوا کہ کہنے والا پانی طلب کرتا ہے)
نوٹ : مرکب ناقص کو ’’ مرکب غیر مفید‘‘ اورمرکب تام کو’’ مرکب مفید، جملہ اور کلام‘‘ بھی کہا جاتا ہے۔
(مرکب ناقص اور مرکب غیر مفید کی چند قسمیں ہیں،جن کی نشاندہی ان کے مواقع پر کر دی جائے گی ان میں دو کا استعمال زیادہ ہو تا ہے:(۱) مرکب اضافی (۲) مرکب توصیفی)