سبق (۳)
{اسم}

کلمہ کی تین قسمیں ہیں: (۱) اسم(۲) فعل( ۳) حرف
اسم:وہ کلمہ ہے جو کسی چیز کا نام ہو ۔انسان ،جاندار ،اور بے جان چیزوں کے لئے بولا جاتا ہو، اور اس میں تینوں زمانوں میں سے کو ئی زمانہ نہ پایاجائے،جیسے:
حَامِدٌ،سَلْمٰی، اَلْاَسَدُ ( شیر)، اَلشَّجَرُ(درخت)،اَلْقَمََرُ(چاند)، اَلْوَرْدَۃُ (گلاب) ، اَلْمَکَّۃُ، اَلْمَدِیْنَۃُ وغیرہ ۔
اسم کو پہچاننے کے لئے کچھ علامتیں ہیں، جو اسم کے ساتھ ہی خاص ہیں،
جیسے: اسم کے شروع میں ’’الف لام‘‘ ہو،مثلا:اَلْمَسْجِدُ،اَلْکِتَابُ ،اَلْقَلَمُ
یا آخرمیں’’تنوین ‘‘ہو،جیسے:مَسْجِدٌ،کِتَابٌ ،قَلَمٌ
یاآخر میںگول ’’ۃـ‘‘ ہو،جیسے: کَلِمَۃٌ ،مَدْرَسَۃٌ ،شَجَرَۃٌ وغیرہ
نوٹ :کسی بھی اسم پر الف لام اور تنوین دونوں ایک ساتھ نہیں آسکتے۔
(ان کے علاوہ بھی کچھ علامتیںہیں جو اسم کے ساتھ خاص ہیں جن کی تفصیل ان شاء اللہ آگے آ ئے گی۔)

(عربی زبان میںکچھ الفاظ ایسے ہوتے ہیں ،جن سے کئی لفظ بنتے ہیں،اور کچھ الفاظ ایسے ہوتے ہیںجن سے کوئی لفظ نہیں بنتا ،الفاظ کے بننے اور نہ بننے کے اعتبار سے اسم کی تین قسمیں ہیں،جس کی تفصیل آئندہ سبق میں پڑھیں۔)