{تــمرین ۱۱۷}
مندرجہ ذیل جملوں کاترجمہ اورترکیب کریں:
رَأَیْتُ عَالِمًا وَشَاعِرًا، مَاتَ زَیًدٌ ثُمَّ عَمْرٌو، لَقِیْتَ زَیْدًا أَمْ عَمْرًوا، اِنْطَلَقْتُ أَنَا فَرَاشِدٌ إِلَی الْمَدْرَسَۃِ، قَامَ زَیْدٌ لٰکِنْ عَمْروًا قَائِمٌ، أَکْرَمَ الصَّالِحُ لَاالطَّالِعُ، سَافَرْتُ أَنَا وَزَیْدٌ۔
عطفِ بیان کاترجمہ اورترکیب
عطفِ بیان: ایسا تابع ہے جو صفت نہ ہو اوراپنے متبوع کی وضاحت کرے، جیسے: أَقْسَمَ بِاللّٰہِ أَبُوْ حَفْصٍ عُمَرُ (ابو حفص عمر نے اللہ کی قسم کھائی)۔
ترجمہ کرنے کا طریقہ: پہلے متبوع کا ترجمہ کریں گے، پھر تابع کا، جیسے: أَقْسَمَ بِاللّٰہِ أَبُوْ ْحَفْصٍ عُمَرُ (ابو حفص عمر نے اللہ کی قسم کھائی)۔
ترکیب: عطف بیان میں متبوع کو مبین،اور تابع کوعطفِ بیان کہتے ہیں، جیسے: أَقْسَمَ فعل، بِاللّٰہِ، جار مجرور سے مل کر متعلق أَقْسَمَ فعل کے، أَبُوْ حَفْصٍمبین، عُمَرُ، عطفِ بیان، مبین اپنے عطف بیان سے مل کر، أَقْسَمَ کا فاعل، أَقْسَمَ فعل اپنے فاعل اور متعلق سے مل کر جملہ فعلیہ خبریہ ہوا۔
{تــمرین ۱۱۸}
مندرجہ ذیل جملوں کاترجمہ اورترکیب کریں:
صَارَ عُمَرُ بْنُ الْخَطَّابِ خَلِیْفَۃً بَعْدَ أَبِيْ بَکْرِنِ الصِّدِّیْقِ، حَضَرَ زَیْدٌ أَبُوْ حَارِثٍ، قَالَ عَبْدُاللّٰہِ بنُ مَسْعُوْدٍ، جَائَ عَبْدُ اللّٰہِ أَبُوْ الْبَرَکَاتِ، کَتَبَ سَیْفُ اللّٰہِ خَالِدُ بْنُ الْوَلِیْدِ، جَائَ زَیْدٌ أَبُوْ الْحَسَنَاتِ، قَالَ عَبْدُ الرَّحْمٰنِ أَبُوْ ھُرَیْرَۃَؓ، جَاھَدَ عَبْدُ اللّٰہِ ابْنُ عَبَّاسٍ۔