ہے اور خدا کے نزدیک جمعہ کے دن کی عظمت عید اور بقرعید کے دن سے بھی زیادہ ہے اور اس دن کی پانچ باتیں ہیں جو اس کی عظمت اور فضیلت کی دلیل ہے (۱) اس دن اللہ تعالیٰ نے حضرت آدمؑ کی تخلیق فرمائی (۲) اسی دن اللہ تعالیٰ نے حضرت آدم کو جنت سے زمین پر اتارا (۳)اسی دن اللہ تعالیٰ نے حضرت آدم کو وفات دی (۴) اسی دن ایک ساعت آتی ہے کہ اس دن میں بندہ اللہ تعالیٰ سے حرام چیز کے علاوہ جو چیز بھی مانگتا ہے اللہ تعالیٰ ضرور عنایت فرماتا ہے یعنی حرام مانگنا مقبول نہیں ہے (۵) اور اسی دن قیامت قائم ہوگی تمام مقرب فرشتے آسمان، زمین، ہوا، پہاڑ اور دریا سب جمعہ کے دن سے ڈرتے ہیں اس وجہ سے کہ قیامت جمعہ کے دن آنی ہے نہ معلوم کس وقت آجائے اور امام احمد رحمۃ اللہ علیہ نے حضرت سعدابن معاذ رضی اللہ عنہ سے اس طرح نقل کیا ہے کہ ایک انصاری صحابی آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضرہوئے اور آپؐ سے عرض کیا کہ مجھے جمعہ کے بارے میں بتائے کہ اس دن کی کیا خوبیاں ہیں آپؐ نے فرمایا کہ اس دن کی پانچ باتیں ہیں باقی حدیث اوپر تک اسی طرح ذکر کی ہے۔
تشریح:
وفیہ خمس: اور اس دن کی پانچ باتیں ہیں جمعہ کے فضائل کے بیان میں تحدیداور حصر کے لئے نہیں فرمایا گیا ہے جس کا مطلب یہ ہوا کہ جمعہ کے دن صرف یہی پانچ باتیں فضیلت کی ہیں، بلکہ اس دن کی اور بھی ایسی باتیں ہیں جو فضیلت کے اعتبار سے جمعہ کو تمام دنوں میں امتیاز بخشتی ہیں مثلاً منقول ہے کہ جنت میں حق تعالیٰ شانہ کی زیارت کا شرف بھی جمعہ کے دن حاصل ہوا کریگا یا اسی طرح اور دوسری باتیں منقول