آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو ایک گونہ سکون ہوا۔اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم حضرت عباس رضی اللہ عنہ اور حضرت علی رضی اللہ عنہ کے سہارے مسجد میں تشریف لائے اور نماز پڑھائی۔(سیرت المصطفےٰ ﷺ، ۳۳۲\ربانی، بحوالہ الہدایہ و النہایہ)
حضرت مدنی رحمۃ اللہ علیہ کا واقعہ
ایک مرتبہ حضرت مدنی رحمۃ اللہ علیہ کے یہاں سالن دو برتنوں میں آگیا۔عامتہً ایک سالن بڑے برتن میں آیا کرتا تھا۔اسی کے چاروں طرف سب بیٹھ کر کھایا کرتے تھے۔اس دفعہ کوئی صاحب بیمار تھے ان کے واسطے سالن علیحدہ آگیا۔تو حافظ محمد حسین صاحب نے کہا کہ حضرت حضرت اب سالن دو دو طرح کا کھایا جایا کرے گا۔کہیں حدیث میں دو سالن کھانا حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے۔ اس پر حضرت مدنی علیہ الرحمہ نے ابوداؤد شریف کی روایت بیان نہیں فرمائی(جس میں دو سالن کا تذکرہ ہے) بلکہ یہ فرمایا: مجھ سے اتباع سنت کہاں ہوسکتا ہے۔میں تو پیٹ کا کتا ہوں۔یہ ان حضرات کا حال تھا۔
اشاعت دین اور خدمت حدیث نبویﷺ
جس قدر کسی شخص کو حضور صلے اللہ علیہ وسلم سے عشق ہوگا۔اسی قدر سنت کا اتباع کرے گا۔اپنی زندگی کو حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت کے مطابق بنائے گا۔اسی قدر دین کی اشاعت کرے گا۔یہ اس کی علامت ہے۔اب دیکھ لو اٹھاکر۔
حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ علماء دیوبند کو عشق ہے۔محبت ہے۔ساڑھے چھ سو طلبہ آج بھی دارالعلوم دیوبند میں بخاری شریف پڑھنے والے موجود ہیں جو رات دن حدیث پڑھتے ہیں، بخاری شریف کو چھاپنے والے دیوبندی، مولانا احمد علی صاحب ؒ