فائدہ:مروی ہےکہ نبی کریمﷺاورحضرت ابوبکرصدیق﷜کے درمیان کوئی شخص نہیں بیٹھا کرتا تھا،ایک دفعہ ایک شخص آیا تو آپﷺنے اُسے اپنے اور حضرت ابوبکر صدیق﷜کے درمیان بٹھایا ،حضرات صحابہ کرام﷢ کو یہ منظر دیکھ کر تعجب ہوا ،جب وہ شخص اُٹھ کر چلا گیا تو آپﷺنے اِرشاد فرمایا:یہ شخص مجھ پر یہ (مذکورہ) درود پڑھتا ہے۔
حوالہ: (القول البدیع:57)(ذریعۃ الوصول:56 ،57)
٭……………٭……………٭
﴿قبر سے لیکر روضہ اَطہر تک کے حجابات کا اُٹھ جانا﴾
« اَللّٰهُمَّ صَلِّ عَلٰى مُحَمَّدٍ صَلَاةً تَكُوْنُ لَكَ رِضيً وَّلِحَقِّهِ أَدَاءً »
ترجمہ: اے اللہ ! حضرت محمدﷺ پر ایسی رحمت نازل فرما جو آپ کی پسندیدہ ہو اور جس کے ذریعہ نبی کریمﷺکا حق اداء ہوجائے۔
فائدہ:اِرشادِ نبوی ہے:جو شخص روزانہ33 مرتبہ یہ دُرود شریف پڑھے اللہ تعالیٰ اُس کیلئے اُس کی قبر اور نبی کریمﷺکی قبر کے درمیان (پردے)کھول دیں گے۔
حوالہ: (ذریعۃ الوصول:67)
٭……………٭……………٭