فتاویٰ
انتخاب :عبداللہ خالد قاسمی خیرآبادی
خطبہ جمعہ کے دوران چندہ کرنا
سوال-جامع مسجد میں خطبہ کے دوران مسجد کے لیے چندہ کرنا کیسا ہے۔
جواب- واضح رہے کہ خطبہ کے دوران خطبہ سننے کے علاوہ کوئی دوسرا کام کرنا جائز نہیں ، خواہ چندہ کرنا ہو، یا دینا ہو، یا کوئی اور کام ہو، لہٰذا مسجد کی انتظامیہ کو چاہیے کہ خطبہ شروع ہونے سے پہلے پہلے یا نماز کے بعد چندہ کرنے کی ترتیب بنا لے۔ اور خطبہ کے دوران چندہ کرنے سے بچا جائے۔
جسم کے زائد بالوں کے کاٹنے کا حکم
سوال- کیا فرماتے ہیں علماء کرام ومفتیان عظام مسئلہ ہذا کے بارے میں کہ زیر ناف بالوں کے کاٹنے کی حد کہاں تک ہے ،بدن کے کون کون سے بالوں کا کا ٹنا جائز یا واجب ہے؟ او رکون سے ناجائز اور مکروہ ہیں ؟ تفصیل سے ذکر کریں ۔
جواب- مرد وعورت کے لیے اپنی شرم گاہ او رجائے پاخانے اوران کے ارد گرد کے بال کاٹنا ، اسی طرح موئے زیر بغل کاٹنا، مونچھوں کے کاٹنے میں مبالغہ کرنا سنت ہے ، ہفتے میں ایک بار کاٹنا مستحب ہے،اگر ہر ہفتے میں نہ کاٹ سکے تو پندرہ دن کے بعد کاٹے ، زیادہ سے زیادہ چالیس دن کے بعد نہ کاٹنے سے گناہ گار ہو گا، سر کے بالوں کو منڈوانا اور سنت کے مطابق چھوڑنا دونوں جائز ہیں مگر بعض بالوں کو کٹوانا او ربعض کو چھوڑنا منع ہے اس کے علاوہ پیٹھ اور سینے کے بال کا ٹنا بھی جائز ہے مگر خلاف اولیٰ ہے اور سفید بالوں کا نوچنا مکروہ ہے۔