عورت اپنے خاوند پر اس صورت میں حرام ہے یا نہیں ؟
(الجواب ) اس صورت میں حرمت مصاہرت ثابت نہ ہوگی اور عورت مذکورہ اپنے شوہر کے نکاح میں ہے اور وہ عورت اپنے شوہر پر حرام نہیں ہوئی عورت کا قول شرعاً جھوٹا ہے لقولہ علیہ الصلوٰۃ والسلام البینۃ علی المدعی والیمین علی من انکر (۱) فقط
بیٹے کی بیوی کا ہاتھ پکڑا مگر شہوت کا علم نہیں ‘ کیا حکم ہے
(سوال ۶۳۵) ایک شخص نے بد فعلی کے واسطے اپنی بیوی کا ہاتھ پکڑنا چاہا لیکن خطا اس بدکار نے اپنے بیٹے کی بی بی کا ہاتھ پکڑا بی بی بولی کہ میں ہوں اس نے یہ سن کر شرما کر چھوڑ دیا لیکن ہاتھ پکڑنے کے وقت شہوت تھی یا نہیں یہ معلوم نہیں ہے حرمت ثابت ہے یا نہیں ؟
(الجواب ) پہلی صورت میں جب کہ شہوت کا ہونا یقینی نہیں ہے حرمت مصاہرت ثابت نہیں ہوئی اور اس کے پسر کی زوجہ اپنے شوہر پر حرام نہیں ہوئی ۔ (۲) فقط
عورت سے اس کے شوہر کا نانا زنا کرے تو کیا حکم ہے ؟
(سوال ۶۳۶) ایک شخص کی زوجہ سے اس کے نانا نے زنا کیا اور گواہی بھی ہوچکی ہے ۔ حرمت مصاہرت ثابت ہے یا نہیں ‘ اور نکاح فسخ ہوچکا ہے یا نہیں ؟
(الجواب) نانا کی مزنیہ اس شخص پر حرام ہوگئی اس کو علیحدہ کرنا چاہئیے درمختار میں ہے کہ بدوں متارکت یا تفریق قاضی کے نکاح فسخ نہ ہوگا وبحرمۃ المصاہرۃ لا یرتفع النکاح الخ الا بعد المتارکۃ و فی الشامی‘ الا بعد تفریق القاضی او بعد المتارکۃ (۳)الخ قال فی البحر اراد بحرمۃ المصاہرۃ الحرمات الاربع حرمۃ المرأۃ علیٰ اصول الزانی و فروعہ (۴)الخ فقط
ربیبہ سے زنا کا انکار کیا پھر دباؤ سے اقرار کرلیا پھر انکار‘ کیا حکم ہے
(سوال ۶۳۷) عمر نے شادی کی اور زوجہ سے قربت بھی کی اس کے ساتھ ایک لڑکی ربیبہ بالغہ بھی آئی تھوڑے دن کے بعد جو عمر کی پہلی بیوی سے ایک نابالغ لڑکا تھا اس نے اپنے باپ عمر پر ربیبہ سے زنا کا الزام لگایا لوگوں نے عمر اور ربیبہ سے پوچھا دونوں نے زناکا انکارکیا بعد ازاں ایک خواندہ فقیر آیا اس نے جبراً عمر سے زنا کا اقرار کرایا اور توبہ کرائی پھر عمر زنا کا منکر ہوا اور لڑکا نابالغ بھی منکر ہے اس صورت میں شرعاً کیا حکم ہے
----------------------------
(۱) مشکوۃ شریف باب الاقضیہ والشہادات ص ۳۲۶
(۲) قال فی الذخیرۃ واذا قیلہا او لمسہا او نظر الیٰ فرجہا ثم قال لم یکن عن شہوۃ ذکر الصدر الشہید انہ فی القبلۃ یفتی ما بحرمۃ مالم یتیقن انہ بلاشہوۃ وفی المس والنظر لا ‘ الا ان یتیقن انہ بشہوۃ لان الاصل فی التقبیل الشہوۃ المس والنظر ( رد المحتار فصل فی المحرمات ص ۳۸۸ ج ۲۔ط۔س۔ج۳ص۳۵) ظفیر
( ۳) الدرالمختار علی ہامش رد المحتار فصل فی المحرمات ص ۳۸۹ ج ۲۔ط۔س۔ج۳ص۳۷۔ ظفیر
( ۴) ردالمحتار فصل فی المحرمات ص ۸۴ ۳ ج۲۔ط۔س۔ج۳ص۳۲ ‘ ظفیر